محمد علی بابا خیل کابل میں ایک جڑواں خود کش حملہ میں80مظاہرین کی ہلاکت کی ذمہ داری قبول کرنے کے باعث بہت سے سوالات جنم لیتے ہیں ۔ نہایت ہی بلند بانگ دعوﺅں کے ساتھ ساتھ داعش نے نہ صرف ایک فرقہ ورانہ اقلیت پر حملہ کیا بلکہ یہ بیک وقت طالبان ، افغانستان کے سکیورٹی ڈھانچے اور بین الاقوامی افواج، کے لیے مشکلات پیدا کررہی ہے۔ 2016ءمیں تباہ کن کارروائیوں کا آغاز ہوا اور پھر یوں ایشیا ، افریقہ اور یورپ میں اس کی وسیع تر موجودگی اور عسکریت پسندانہ کارروائیوں میں بھی پھیلاﺅ واقع ہوا ۔ عالمی طور…
Continue Reading »